مولانا طارق جمیل کی نکاح پڑھانے کے پیسے لینے کی تردید

معروف عالم دین مولانا طارق جمیل نے نکاح پڑھانے کا معاوضہ دس لاکھ روپے لینے کی افواہوں کی تردید کردی۔

گزشتہ دنوں لاہور کی مہنگی ترین شادی میں کھانوں اور انٹرٹینمنٹ سمیت پُرتعیش انتظامات پر دو ارب روپے کے اخراجات کے معاملے پر ایف بی آر نے انکوائری کی۔

انکوائری کے مطابق ویڈنگ وینیو کی 120 دن کیلئے بکنگ پر ڈیڑھ کروڑ روپے کی ادائیگی کی گئی جبکہ ڈیکوریشن، آتش بازی، مہندی، ایونٹ مینجمنٹ پر7 کروڑ، فوٹو اور ویڈیو گرافی پر ایک کروڑ خرچ کئے گئے ساتھ ہی فنکاروں اور نکاح خاں کے دی گئی رقم کی تفصیلات بھی سامنے لائی گئیں۔

بعدازاں نکاح پڑھانے والے عالم دین مولانا طارق جمیل نے سوشل میڈیا اپنا ردعمل جاری کرتے ہوئے بتایا کہ اللہ کی توفیق سے تبلیغ دین کیلئے پچھلے 45 برس سے چھ برّاعظم پھرا ہوں، اک طویل مدت سے نبیؐ کی زندگی کے گیت امت کو سنا رہا ہوں، ہماری ترقی میں رکاوٹ ہماری اخلاقی پستی ہے۔

اپنی دوسری ٹوئٹ میں ان کا کہنا تھا کہ نکاح پڑھانے پر پیسے لینے کا بہتان لگانے والوں کی خدمت میں گزارش ہے كہ تبلیغ دین کے اس طویل سفر میں اللہ کی توفیق سے ہزاروں بچیوں اور بچوں کا نکاح اللہ کی رضا کی خاطر پڑھائے ہیں، شیخ محمود صاحب سے مولانا طارق جمیل کی دیرینہ دوستی ہے انکی دعوت پر بیٹی کا نکاح پڑھانے پر کیسے پیسے لے سکتے ہیں؟

Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *