Pakistan wants peace in Afghanistan : Shibli Faraz

وزیراطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ پاکستان افغانستان میں امن کے لئے بارہا کوششیں کررہا ہے،بھارت افغانستان میں دہشت گردی کی پشت پناہی کررہا ہے۔انھوں نے کہا کہ افغانستان چارپانچ دہائیوں سے تشدد کی زد میں ہےاورپاکستان اورافغانستان کارشتہ تاریخی ہے۔

 جمعہ کوسماء کےپروگرام نیا دن میں خصوصی بات کرتےہوئےشبلی فرازنےکہا کہ پاکستان کےعوام اور حکومت افغانستان میں امن چاہتی ہے۔انھوں نےکہا کہ وزیراعظم کےدورہ افغانستان کامقصد یقین دہانی اورعزم کا اظہار تھا کہ پرامن افغانستان علاقےکےلیے اہم ہے۔ شبلی فراز نے کہا کہ افغانستان میں امن اور ترقی کے لیے پاکستان کوششیں کرے گا اور دونوں ملکوں میں خوشحالی کے لیے امن ناگزیر اورجڑی ہوئی ہے۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ افغان پناہ گزینوں کے مسائل ماحول سازگار ہونے کےبعد حل ہوجاتے ہیں۔انھوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی افغانستان میں مقبولیت ہے۔پاکستان میں پڑھنے والےافغان شہری اپنےملک میں اہم عہدے پر ہیں اوران کی پاکستان سےقربت بڑھےگی۔

انھوں نےمزید بتایا کہ افغانستان کی عوام کی محبت اوراظہار خوشی پاکستان کے ساتھ ہے۔ انھوں نے کہا کہ افغان عوام نےبھی وزیراعظم عمران خان کے دورے کا خیرمقدم کیا۔

کرونا سے متعلق شبلی فراز نے کہا کہ کرونا کی دوسری لہر پہلی لہر سے زیادہ خطرناک ہے۔ کرونا مہلک وبا ہے اور اس صورتحال میں جلسے جلوس کرنا عوام دشمنی ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ جلسوں سے کرونا کے پھیلاؤ کا امکان بڑھ جاتا ہے اور سیاست سے گریز کرنا چاہئے۔ انھوں نے کہا کہ کرونا کسی کی وجہ سے نہیں آیا ہے،ساری دنیا جانتی ہے کہ کرونا سے احتیاط لازمی ہے۔

شبلی فرازنےمزیدکہا کہ حکومت ہر وہ فیصلہ کرے گی جس میں لوگوں کو اکھٹا کرنے سے روکنا ہے۔ شبلی فراز نے واضح کردیا کہ اسکولوں کو بند کرنےکے فیصلے کی جانب حکومت جاسکتی ہے۔

Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *